میرے میاں مجھے خود اسٹوڈیو چھوڑنے آتے تھے۔۔۔شادی کے بعد میڈیا میں قدم رکھنے والی خواتین

شادی دو دلوں کی ہم آہنگی کا نام ہے اور جب یہ دو دل جڑ جاتے ہیں تو ہر فیصلہ بھروسہ اور اعتماد کی سیڑھیاں با آسانی طے کر لیتا ہے۔۔۔پاکستانی شوبز انڈسٹری میں ایسی کئی خواتین ہیں جن کو شادی کے بعد یہ موقع ملا کہ انہیں با آسانی میڈیا میں کام کرنے کی آزادی ملی۔۔۔۔اپنی صلاحیتوں کو انہوں نے شادی کے بعد منوانا شروع کیا اور آج کامیاب ہیں۔۔۔

یہ حقیقت ہے کہ مومل شیخ ایک ایسے گھرانے سے تعلق رکھتی ہیں جہاں سب ہی شوبز سے کئی برسوں سے جڑے ہیں اور خود ان کے والد تو سپر اسٹار مانے جاتے ہیں۔۔۔۔لیکن اپنی بیٹی مومل کو انہوں نے کبھی شوبز میں آنے کا نا کہا اور نا ہی مومل کی جرآت ہوئی کہ ایسی کوئی فرمائش کرتیں۔۔۔لیکن شادی کے بعد اچانک ہی مومل کو ایک آفر آئی اورجب انہوں نے اپنے شوہر سے اس بارے میں بات کی تو بڑی خوشی سے جواب میں راضی نامہ مل گیا اور یوں مومل شیخ نے اپنی کامیابیوں کے سفر پر پہلا قدم رکھ دیا۔۔۔

حرا ایک ایسے گھرانے سے تعلق رکھتی تھیں جہاں شوبز میں کام کرنے والوں کو کچھ پسند نہیں کیا جاتا۔۔۔چار بھائیوں کی اکلوتی بہن ہونے کی وجہ سے بھی یہ خیال کیا جاتا تھا کہ وہ کسی ایسی فیلڈ میں نا جائے جہاں ماحول میں تھوڑی سی بھی گڑ بڑ ہو۔۔۔مانی کو حرا شروع سے ہی فین کی حیثیت سے پسند کرتی تھی لیکن یہ نہیں جانتی تھی کہ ایک دن وہ ان کی بیوی بھی بن جائے گی۔۔۔شادی کے بعد جب حرا نے مانی کے ساتھ مختلف شوز میں آنا شروع کیا تو پتہ چلا کہ وہ تو خود اندر سے ایک آرٹسٹ ہیں۔۔۔یوں مانی کی سپورٹ نے حرا کو آگے بڑھایا اور شادی اور بچوں کے بعد حرا نے اس فیلڈ میں قدم رکھ دیا۔۔۔

اداکارہ عظمی گیلانی نے ایک انٹرویو میں بتایا کہ وہ کافی کم عمر تھیں جب ان کی شادی ہوئی۔۔۔عمر میں کافی فرق بھی تھا اور شوہر کے اور میکہ کے ماحول میں زمین آسمان کا فرق بھی۔۔لیکن ریڈیو پر کام کرنے کا شوق تھا۔۔۔یوں جب شادی کے بعد آفر ہوئی تو میاں کی اجازت سے ہی قدم رکھا اور میاں نے بہت سپورٹ کیا ہر میڈیم میں آنے کے لئے-

جب شائستہ لودھی میڈیکل کی طالبہ ہی تھیں کہ ان کی شادی ہوگئی اور ان کی ساس بھی ایک گائناکالوجسٹ تھیں ۔۔۔یہ ان کی پہلی شادی تھی ۔۔۔شادی کے بعد انہیں ریڈیو میں آفر ہوئی اور پھر انڈس میں خبریں پڑھنے کا موقع ملا۔۔۔ان کے شوہر اکثر انہیں اسٹوڈیو چھوڑنے بھی جاتے تھے ۔۔۔

شیئر کریں

Leave a comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *